Thokar Lagi To Sanbhla-URDU STORY

Thokar Lagi To Sanbhla-URDU STORY


“THE END”

  1. سبق تو اس کہانی کااچھا ہے لیکن بینک سے زکواۃ کا ادا کر لینا درست نہیں ، اسلئے کہ زکواۃ کیلئے سال کا گزرنا شرط ہے ، اور بینک اس شرط کو خاطر میں نہیں لاتے ، بس ہر رمضان کو زکواۃ کا ٹتے ہیں۔

    دوسری بات یہ کہ یہ زکواۃ مستحقین تک کم ہی پہنچتی ہے اور اس رقم کا غیر مصرف میں خرچ کرنے سے اس اکاونٹ والے کی زکواۃ ادا نہیں ہوگی،

    لھذا زکواۃ کی رقم خود نکال کر ادا کرنا چاہئےتاکہ وہ بندہ خود صحیح مصرف میں استعمال کرسکے۔

  2. LESSON OF STORY IS GOOD BUT COMENT ABOUT STORY ALSO VERY GOOD AND IT IS MY REQUEST TO ALL READER URDUSTORY TEAM MEMEBERS AND OTHERS PLEASE BE CAREFUL ABOUT GREAT RESPONSIBILITY ABOUT ZAKAAT BECAUSE BY PAYING ZAKAAT EVERY BODY CAN GET PRAYERS & BEST WISHES FROMM POORS (ALLAH HAFIZ

  1. No trackbacks yet.

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: